Zakir Naik ka kachcha chitthha

zakir ka chitthaذاکر نائیک کے بارے چند اہم معلومات *
* ———————————— *
ذاکر نائیک جو پہلے جانوروں کا ڈاکٹر تھا جب اس ڈاكٹري نہیں چلی تو اس نے تبليگے دین کے نام پر اپنا نیا دھندہ کھول کر کروڑوں اور اربوں کا ایسا سلطنت کھڑا کیا کے اس پروگرام کے اسٹیج کی قیمت ہی کروڑوں میں ہوتی ہے لیکن کبھی کسی نے جاننے کی کوشش نہیں کی کہ یہ پیسہ آ کہاں سے رہا ہے؟ کون دے رہا ہے اور كسليے دے رہا ہے؟ اس کے پیچھے مشن کیا ہے؟ مگر افسوس براہ راست سادہ مسلمان اس کی چمک دمک اور هپھج کی گئی چند آیات اور انگریزی بولنے کے انداز سے اس دین کا علم سمجھ کر گمراہ ہو رہا ہے.
آج چاروں طرف ذاکر نائیک کا معاملہ گرمايا ہوا ہے ذاکر نائیک کے اندھے بکت آج اتحاد کا راگ الاپ رہے ہیں لیکن ان اندھ نمازیوں سے کوئی پوچھے کہ

آج اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت کہاں گئے تھے جب ذاکر نائیک اپنی تكريرو میں ایک خدا کی عبادت کرنے والے اور اولیاء سے محبت کرنے والے اور ان کے مجارات پر حاضری دینے والے کروڑوں سنیوں کو نشانہ بنا کر انہیں مشرک اور قبر کو پوجنے والا بتا رہا تھا.
اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت کہاں تھے جب ذاکر نائیک نے کھلے عام TV پر کہا کہ محمد (صلی اليه وسلم) کو ماننا ہمارے لئے حرام ہے (ماذللاه) پھر یہ كذذاب اپنی بات سے مکر گیا تھا کہ میں نے ایسا نہیں کہا.

اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت کہاں تھے جب ذاکر نائیک دین حق کی راہ میں اپنے سارے گھرانے کو قربان کرنے والے شہید اعظم امام حسین (رديللاه تعالی عنہ) کی هقو-باطل کی لڑائی کو * سیاسی جنگ * بتا رہا تھا اور اس کی مهپھلو میں بیٹھے یزید کے چاہنے والے تالیاں بجا رہے تھے.

اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت کہاں تھے جب ذاکر نائیک نے امام حسین (رديللاه تعالی عنہ) پر تین دن پانی بند کرنے، اولاد رسول کو بھوکا پیاسا قتل کروانے والے یزید کو جنت کی بشارت سنا کر کروڑوں مسلمانوں کے دل کو تکلیف پہنچائی تھی . اور آج اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت تالیاں کر رہے تھے.

نبی کریم (اليهسسلام) الشہداء-عی بدر و اهد کے مزار پر تشریف لے جاتے، صحابہ اور سهابيات و اہل بیت اتهار مصطفی جانے رحمت کی مزار پور انوار کی زیارت کو جاتے لیکن اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت کہاں تھے جب یہی ذاکر نالائق اپنی مهپھلو میں کہتا کہ ہمارے باپ دادا مندر جاتے تھے تو ہم مزار پہ جاتے ہیں (ماذللاه) اور مزار پر جانا مندر پہ جانے کی طرح بتاتا تھا.اؤر اس مهپھلو میں بیٹھنے والے یہودیوں کے ےجےنٹ تالیاں بجاتے تھے.
صدیوں سے مسلمان چاروں اماموں کی تقلید کر عبادتوں سے لذت حاصل کر رہے تھے لیکن کبھی ان میں کوئی لڑائی جھگڑا نہیں ہوا لیکن اتحاد کا راگ الاپنے والے اس وقت کہاں تھے جب ذاکر نائیک جیسا جانوروں کا ڈاکٹر یہ کہہ رہا تھا کہ اماموں کی تقلید نے قوم کو نقصان پہنچایا ہے (ماذللاه) جبکہ حقیقت تو یہ ہے کہ مسلمانوں کو نقصان ذاکر نائیک جیسے یہودیوں کے ےجےنٹ جنہیں پیسہ دے کر مسلمانوں میں پھوٹ ڈالنے اور نے-نے پھركو بنانے کے لئے پیدا کیا گیا ہے کی وجہ سے ہوا ہے.

ذاکر نائیک کو بچانے کے لے ریلیاں اور جلوس نکالنے والے اور اتحاد کا راگ الاپنے والوں کا اتحاد اس وقت کہاں تھا جب ذاکر نائیک اپنے نبی کی محبت اور تعظیم اور عظمت کے اظہار کیلئے يدميلادننبي کا جلوس نکالنے والے سنیوں پر بدعتی اور مشرک ہونے کا فتوی لگا کر انہیں جهننمي بتا رہا تھا اور یہی اتحاد کا دعوی کرنے والے اسے منع کرنے کی بجائے بہت خوش ہو رہے تھے.
ذاکر نائیک کو بچانے کے لئے (جبکہ پولیس نے ابھی تک اس کو کچھ نہیں کیا) ہر عام مسلمان سے مدد کی فریاد لگانے والے یہ اتحاد کے ٹھیکیدار اس وقت کہاں تھے جب یہی ذاکر نائیک اللہ کے رسول (اليهسسلام) اور اس کے اولیاء سے مدد مانگنے والوں کو مشرک کہہ رہا تھا.
شفاعت اور وسیلے کو ایک ہی چیز بتا کر اور ان کے اس ناجائز ہونے پر قرآن کی پچیس آیات کا جھوٹا حوالہ دے کر مسلمانوں کو گمراہ کرنے والا یہ جانوروں کا ڈاکٹر مسلمانوں میں تپھركا پیدا کر رہا تھا تب یہ اتحاد کے ٹھیکیدار کہاں تھے.
* نوٹ: -کم پڑھے -لكھے لوگوں اور دین کی معلومات نہیں رکھنے والے لوگوں کو اپنی انگریزی اور چند رٹي ہوئی آیتوں سے دھوکہ دینے والا اور اولےما-عی اہل سنت کے سامنے آنے دور رہنے والا ذاکر نائیک جسے اولےما-اے-اہل سنت نے سری لنکا میں گھیر کر شفاعت اور وسیلے کے ایک ہی چیز ہونے اور اس کے ناجائز اور حرام ہونے پر قرآن میں پچیس آیات کا حوالہ پوچھا تو اس سٹٹي-پٹٹي گم ہو گئی تھی اور آج تک یہ اس کا جواب نہیں دے پایا جس کی ویڈیو نیٹ پر موجود ہے. *

Tagged as:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *