Shahzad Mughal Shan Shahzad – doori dil ko gawara naheen

dooridoori dil ko gawara naheen
bn tray ab gzara naheen
koaii pl aesa gzra naheen
jis mein tjh ko pkara naheen
aaRay aati hain mjborya’n
chlta ansa’n ka chara naheen
zndgi aek hi bar hay
koaii aata dobara naheen
mjh ko mrna goara hay ab
par bchhRna goara naheen
sirf khnay ko apnay hain sab
sch mein koaii hmara naheen
kea kho’n ja’n say jatay hoaey
maein nay kis ko pkara naheen
rb ki rhmt ki amyd hay
aur koaii shara naheen
soch mein gm hoon shhzad maein
koaii milta ashara naheen
shanؔ shhzad mghl
غزل
دوری دل کو گوارا نہیں 
بن ترے اب گزارا نہیں
کوئی پل ایسا گزرا نہیں
جس میں تجھ کو پکارا نہیں
آڑے آتی ہیں مجبوریاں 
چلتا انساں کا چارا نہیں
زندگی ایک ہی بار ہے
کوئی آتا دوبارا نہیں
مجھ کو مرنا گوارا ہے اب
پر بچھڑنا گوارا نہیں
صِرف کہنے کو اپنے ہیں سب
سچ میں کوئی ہمارا نہیں 
کیا کہوں جاں سے جاتے ہوئے
مَیں نے کِس کو پکارا نہیں
رب کی رحمت کی امید ہے
اور کوئی سہارا نہیں 
سوچ میں گم ہوں شہزاد مَیں 
کوئی مِلتا اشارا نہیں
شانؔ شہزاد مغل

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *