WHY MUSLIM SALEEM’S WEB DIRECTORIES ARE MORE IMPORTANT THAN REKHTA WEBSITE

muslim saleem ki directories aham kyoonWHY MUSLIM SALEEM’S WEB DIRECTORIES ARE MORE IMPORTANT THAN REKHTA WEBSITE: ARTICLE BY NOTED JOURNALIST JANAB ARIF AZIZ IN DAILY NADEEM DATED MARCH 19, 2017
مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز ریختہ ویب سائٹ سے اہم کیوں؟
عارف عزیز
کھوج خبر نیوز کے چیف ایڈیٹر مسلم سلیم نے، جو خود ایک بین الاقوامی شہرت ےافتہ شاعر اور ادیب ہیں، 2010ءمیں دنیا میں سب سے پہلے اردو شاعروں کا ڈاٹا بیس تیار کرنا شروع کیا تھا ۔ بعد میں ڈبلیو ڈبلیو ڈبلیو اردو یوتھ فورم ، بہا ر نے مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز سے مواد اور تصاویر لے کر اپنی ویب سائٹ کی تکمیل کی۔ (حالانکہ ان کی ایمانداری یہ ہے کہ جہاں مسلم سلیم کی اینٹری ہے وہاں نیچے کی طرف انھوں نے اسکا تحریری اعتراف بھی کیا ہے) ۔”ریختہ ڈاٹ اورگ “اس کے بعد کی چیز ہے۔ واضح ہو کہ بابائے اردو انٹرنیٹ کے نام سے مشہور مسلم سلیم صاحب کو مسرت ہے کہ ”ریختہ ڈاٹ اورگ “ نے اس کام کو اور وسعت دی ہے ۔ اس میں بہت کچھ نیا ہے۔ لیکن سب کچھ نہیں۔ ریختہ اور بعد میں بننے والی اس نوعیت کی ویب سائٹس نے کسی نہ کسی شکل میں مسلم سلیم کی ۷۲ ویب ڈائرکٹریز سے استفادہ کیا ہے۔ اس کے باوجود مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز کی اہمیت اور افادیت بعد کی سب ویب سائٹس سے زیاد ہ ہے۔
مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز کی اہمیت اور افادیت خاص طور پر ان محققین کے لےے زیادہ ہے جن کو کسی خاص ملک، صوبہ یا شہر کے شعراءو ادباءکے بارے میں معلومات حاصل کرنی ہوتی ہیں کیونکہ مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز اسی نہج پر ترتیب دی گئی ہیں۔ ریختہ میں ایک خاص معیار تک کے مشاہیر کو جگہ ملتی ہے جبکہ مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز میں متعلقہ ملک، صوبہ یا شہر کے تمام شعراءو ادباءکا تذکرہ بلا تخصیص مل جاتا ہے۔
یاد رہے کہ اپنی ویب سائٹ ”کھوج خبر نیوز ڈاٹ کام“ (www.khojkhabarnews.com) مسلم سلیم نے۴ ملکوں اور ۰۲ شہروںصوبوں کے شعراءاور ادباءکی ڈائرکٹریز ترتیب دی ہیں :۔

1. Urdu poets and writers of India
2. Urdu poets and writers of World
3. Urdu poets and writers of Madhya Pradesh
4. Urdu poets and writers of Pakistan
5. Urdu poets and writers of Allahabad
6. Urdu poets and writers of Agra
7. Urdu poets and writers of Shahjahanpur
8. Urdu poets and writers of UP
9. Urdu poets and writers of Canada and USA
10. Urdu poets and writers of Jammu-Kashmir
11. Urdu poets and writers of Gujarat
2. Urdu poets and writers of Hyderabad
13. Urdu poets and writers of Karnataka
14. Urdu poets and writers of Maharasthra
15. Urdu poets and writers of Rajasthan

16. 16. Urdu poets and writers of Tamil Nadu
17. Urdu poets and writers of Aurangabad
18. Urdu poets and writers of West Bengal
19. Urdu poets and writers of India Part-1I
20. Urdu poets and writers of World Part II
21. Female Urdu Poets and Writers
22. Hindu Naatgo Shuara
23. Urdu poets and wrirters of Pakistan
24. Urdu Poets and writers of Bihar
25.Urdu Poets and writers of Delhi/Haryana/Punjab/Himachal
26. Urdu Poets and writers of Burhanpur
27. Urdu newspapers and periodicals of India
28. Urdu poets and writers of Delhi/Haryana/Punjab/Himachal Pradesh
آج ہر طرف ریختہ ویب سائٹ کا چرچا ہے لیکن بہت کم لوگوں کو یہ بات معلوم ہے کہ مسلم سلیم یہ کام بہت پہلے یعنی ۰۱۰۲ ءسے کر رہے ہیں۔ اور آج بھی اردو شعراءاور ادباءپر مسلم سلیم کا جمع کردہ ڈاٹا بیس تعداد اور اہمیت دونوں میں ریختہ سے کم نہیں ہے اور وہ بھی جب کہ مسلم سلیم یہ کام تنِ تنہااور اپنے محدود مالی وسائل سے کر رہے ہیں ۔ جہاں ریختہ میں مشاہیر اور معروف شخصیتوں کا ڈاٹا ہے وہیں مسلم سلیم کی ڈائرکٹریز شہروں، صوبوں اور ملکوں سے متعلق ہیں جن میں متعلقہ علاقوں کے سبھی شعراءو ادبا ءکے تذکرے ہیں۔ اس وجہ سے مسلم سلیم کی ڈائرکٹریز کی ڈاٹا زےادہ وقیع ہے۔ یہی سبب ہے کہ محقق مسلم سلیم کی ڈائرکٹریز سے زےاد ہ مستفیض ہو رہے ہیں ۔ حال ہی میں حیدرآباد کے مشہور ہفتہ وار اخبار” گواہ“ کے مدیر سید فاضل حسین پرویز نے صحافت اور ادب پر اپنے تحقیقی مقالے میں مسلم سلیم کی ڈائرکٹریز سے استفادہ کا ذکر کیا ہے۔
فیس بک چیٹ باکس میں مسلم سلیم سے چیٹ کرتے ہوئےسید فاضل حسین پرویز لکھتے ہیں”مسلم سلیم بھائی، آپ کے ذکر کے بغیر میرا مقالہ ادھورا رہے گا۔آپ کا کام میرے ریسرچ ورک میں بہت کام آرہا ہے۔
یہ مضمون ترتیب ہی دیا جا رہا تھا کہ مسلم سلیم صاحب کے پاس مشہور ادیبہ محترمہ رینو بہل کا میسیج آیا (مورخہ یکم مارچ ۷۱۰۲ ئ) کہ ان کی ڈائرکٹریز میں رینو بہل کا حوالہ دیکھ کر کسی نے ادبی سلسلے میں ان سے رجوع کیا جس کے لےے انھوں نے مسلم سلیم کے لےے اظہارِ تشکر کیا نیز ان کے ڈاٹا کو اپڈیٹ کرنے کی درخواست کی۔
یہ انھیں چند لوگوں پر موقوف نہیں ہے بلکہ انٹرنیٹ سے منسلک زیادہ تر شعرا اور ادباءکا مسلم سلیم کے لےے یہی تاثر اور خےالات ہیں۔ ۲۳ شعر نے مسلم سلیم کو جو ۵۵ شعری نذرانے پیش کیے ہیںان میں سے کئی نذرانوں میں ڈائریکٹریز کے ذریعہ مسلم سلیم کی گراں قدر خدمات کا کھلے دل سے اعتراف بھی ہے۔
جب ڈی ڈی اردو لانچ ہوا تو انھیں انٹرویوز کے لےے شعراءو ادباءکے نام پتوں کی ضرورت ہوئی۔ انھوں نے انٹرنیٹ پر تلاش کی تو مسلم سلیم کی ڈائرکٹریز سے ان کا کام بن گیا۔ اسی بنا ءپر ڈی ڈی اردو دہلی کے عملے نے مسلم سلیم کا انٹرویو لیا جو اب بھی یو ٹیوب پر دیکھا جاسکتا ہے۔ شیفیلڈ انگلینڈ کے ایف۔ایم ریڈیو کی اینکر محترمہ کوثر شاہ نے وہیں سے فون کے ذریعے ایک گھنٹے کے لائیو شو میں مسلم سلیم کا انٹریو نشر کیا جس میں بیشتر سوالات ڈائریکٹریز اور مسلم سلیم سکی اعلیٰ شاعری کے بارے ہی میں تھے۔
منشی پریم چند آرکائﺅز کی سابق ڈائرکٹر ڈاکٹر صبیحہ انجم نے مسلم سلیم کو ای۔میل کرکے ڈائرکٹریز مرتب کرنے پر مبارکباد دی اور ا ن کے اس کام کو اپنے کام سے بھی زیادہ اہم بتایا۔ بعد میں جب مسلم سلیم دہلی گےے تو ڈاکٹر صاحبہ نے بہ نفسِ نفیس انکو منشی پریم چند آرکائﺅز کے مختلف شعبوں کا معاینہ کروایا۔
اردوانگلش کے معتبر شاعر، ادیب اور ماہرِ تعلیم ڈاکٹر شہزادرضوی (واشنگٹن) اپنے مضمون ”مسلم سلیم ۱۲ویں صدی کا شاعر “ میں رقم طراز ہیں ” اےک دن اچانک انٹرنےٹ سرفنگ کے دوران مےری نگاہ اےک وےب سائٹmuslimsaleem.wordpress.com پر ٹھہر گئی ۔ ےہ بھوپال مےں مقیم شاعر ، افسانہ نگار اور صحافی مسلم سلیم کی وےب سائٹ تھی۔ مےں کئی گھنٹوں تک اس بلاگ کی سرفنگ کرتا رہا۔ اس مےں مسلم سلیم نے صرف اپنی شاعری اور شخصےت کے بارے مےں ہی نہیں لکھا بلکہ اردو دنےا کے ہزار ہا شعراءو ادبا کی مختلف ڈائرےکٹریز ترتیب دے کر تعارف و تصاویر پوسٹ کی ہےں۔ مےرے نزدےک اردو دنےا مےں اتنا بڑا کام پہلے کبھی نہیں ہوا۔ بعد مےں پتہ چلا کہ مسلم سلیم نےkhojkhabarnews.com, muslimsaleem.blogspot.com, ,urdunewbsblog.wordpress.com, poetswriters.blogspot.com, اور کئی دےگر وےب سائٹس کے ذریعہ بھی اردو کے اس بےش بہا اور مخلصانہ خدمت کو مزید آگے بڑھاےا ہے۔
ایمان ایف ایم شیفلڈ ، انگلینڈ کی اینکر محترمہ کوثر شاہ نے مسلم سلیم کی ڈائرکٹریز کی مدد سے دنیا کے متعدد شعراءو ادباءکی معلومات حاصل کی۔ کوثر شاہ نے مسلم سلیم کی شاعری اور انٹرنیٹ خدمات پر ایک گھنٹے کا لائیو انٹرویو نشر کیا جسے یوٹیوب پر ۴ حصوں میں اپلوڈ کیا گیا ہے۔ اصل انٹر ویو حصہ دوم سے شروع ہوتا ہے۔
اسی طرح ڈی ڈی اردو پر مسلم سلیم کا کا لائیو انٹرویو بھی یوٹیوب پر موجود ہے۔ اس میں بھی ڈائرکٹریز پر کافی روشنی ڈالی گئی۔ فروغ اردو کے لئے مسلم سلیم کی دیگر کوششوں کا بھی سیر حاصل تذکرہ ہے۔
مسلم سلیم کی ڈائریکٹریز حالاتِ زندگی، ناموں، پتوں وغیرہ پر مبنی ہیں اور ان کی نوعیت انٹرایکٹو ہے۔شعراءاور ادباءسے متعلق جو بھی معلومات حاصل ہوتی ہیں ، مسلم سلیم ان کو متعلقہ ڈائریٹری میں پوسٹ کر دیتے ہیں۔ اگر معلومات نہیں صرف فوٹو یا شایع شدہ نمائند ہ تحریر مل جاتی ہے تو اسے ہی پوسٹ کردیتے ہیں تاکہ متعلقہ علاقے کا کوئی قلمکار چھوٹ نہ جائے۔
۰۵۹۱ ءمیں شاہ آباد میں تولد مسلم سلم اپنی زندگی کے اولین ۴۲ برسوں تک علی گڑھ میں رہے اور درجہ¿ ِ اول سے اے۔ایم۔یو اسکولوں کے طالب علم رہے اور پھر بی اے آنرس کرکے الہٰ آباد میں 1975 سے 1980 تک مقیم رہے اور الہٰ ّ آباد یونی ورسٹی سے عربی میں ایم اے کیا۔ زمانہ¿ِ طالب علمی میں مسلم سلیم کے افسانے ”ننگی سڑک کو“ محترمہ عصمت چغتائی کے دستِ مبارک سے ایوارڈ دیا گیا تھا۔ مسلم سلیم کا افسانہ ©”سکھ کی نیند“آل انڈیا ریڈیو کی فارن سروس کے ذریعے نشر کیا گیا۔ بعد میں ان کی تمامتر تخلیقی توجہات شاعری خوصاً غزل پر مرکوز ہو گئیں۔ کئی رسائل میں مسلم سلیم پر گوشے شائع ہو چکے ہیں۔
مسلم سلیم 1980 سے بھوپال میں مقیم ہیں جہاں انھوںنے صحافتی کیرئر کا آغاز روزنامہ آفتاب جدید سے کیا۔ 1986 میں انگریزی روزنامہ ”نیشنل میل“، 2000 سے 2004 تک ہندی روزنامہ ”دینک بھاسکر“اور 2013 ک انگریزی روزنامہ ”ہندوستان ٹائمس“ میں کام کیا اور اب ویب سائٹ ”کھوج خبر نیوز ڈاٹ کام“ اور ماہنامہ ”ہم سخن ٹائمس“ کے چیف ایڈیر ہیں۔
اب وقت آگیا ہے کہ اردو جہان کو مسلم سلیم کی ان بیش بہا اور مخلصانہ مساعی سے روشناس کرایا جائے۔ان کو کوئی ایوارڈ دیا جائے یا نہیں لیکن کم از کم صحیح طریقے سے کریڈٹ ہی دے دیا جائے جو ان کے بجائے دوسروں کو دیا جا رہا ہے۔

3 thoughts on “WHY MUSLIM SALEEM’S WEB DIRECTORIES ARE MORE IMPORTANT THAN REKHTA WEBSITE”

  1. After reading the above comparison Rekhta and web site made by Muslim Saleem,I could guess the advantage of the work carried out by Muslim Saleem serve the data s of all Urdu writers/poets and all other scholars not of only Urdu but I have seen a portion of Hindi too….After studying and observing the details a graph of all sectors i.e. province ,city, of India and Pakistan also of other countries of poetry,write ups work,dramas,stories,criticism can be mentioned with the available density of that place and area——–
    I think contact points and mail address is also furnished for the convenience to contact them to have a dialogue for mutual action to enhance the sukhan and Urdu literature —— Different graphs can be plotted of Urdu work province and country wise….

    NASEEM.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *